Home / اردو / مہلک وبائی بیماری کرونا وائرس بزرگوں اور بیمار افراد کے حج پر پابندی کا سبب بن گئی

مہلک وبائی بیماری کرونا وائرس بزرگوں اور بیمار افراد کے حج پر پابندی کا سبب بن گئی

برمنگھم ( پ ر) مہلک وبائی بیماری کرونا وائرس بزرگوں اور بیمار افراد کے لئے اس سال حج پر پابندی کا سبب بن گئی اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن اور دنیا بھر کے میڈیکل ایکسپرٹس کے مشوروں پر حکومت سعودی عربیہ نے انتہائی مہلک بیماری کرونا وائرس جو سعودی عرب سمیت دنیا کے مختلف ممالک میں اب تک 44افراد کی جان لے چکی ہے اس سے عارمین حج و عمرہ کے تحفظ کے لئے اس سال جج کے لئے نئے اقدامات کا اعلان کیا ہے ان کے مطابق بڑی عمر کے کمزور افراد دل شوگر اور گردوں کی بیماری میں مبتلا افراد حاملہ خواتین چھوٹی عمر کے بچے کہ جن کے جسم میں قوت مدافعت کم ہوتی اور جن کے وبائی بیماریوں کے شکار ہونے کے خدشات زیادہ ہوتے ہیں ان کے لئے اس سال فریضہ حج کے لئے پابندی لگا دی گئی ہے تاکہ نہ صرف ان عازمین کی جانوں کا تحفظ ہو بلکہ ان کی واپسی پر اس مہلک اور خطر ناک وبائی بیماری کا ان کے خاندان اور کمیونٹی میں پھیلنے کے خدشات کا بھی سد بات ہو سکے ایسو سی ایشن آف برٹش حجاج نے اس صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام عازمین حج و عمرہ سعودی احکام کے ساتھ تعاون کرتے ہوئے اپنی اور اہلخانہ کی جانوں کے تحفظ اور اس موذی اورخطر ناک وبائی بیماری کے پھیلائو کو روکنے کو یقینی بنائیں برطانیہ سے ہر سال تقریباً25ہزار کے قریب عازمین فریضہ حج ادا کرتے ہیں اور جہاں حکومت سعودی عربیہ اس بیماری سے عازمین کے تحفظ کے لئے ہر ممکن کوششیں اور اقدامات کررہی ہے وہاں یہ امر انتہائی افسوسناک ہے کہ برطانیہ میں متعلقہ ہیلتھ اتھارٹیز اس خطر ناک صورتحال سے نپٹنے اور برٹش عازمین کے تحفظ کے لئے ضروری اقدامات سے لاتعلق ہیں برٹش عازمین حج و عمرہ کو اس بیماری سے بچائو اور حج کے دوران حفاظتی تدابیر اور صحت سے متعلق دیگر اہم معلومات بہم پہنچانے کے لئے کسی قسم کی مہم کے لئے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے حالیہ برسوں میں حج کے دوران مینجائٹس ( گردن توڑ بخار) کی وبا نے بھی ایسی ہی خطر ناک صورتحال پیدا کردی تھی اور بد قسمتی سے حج سے لوٹنے والے 20 سے زائد برٹش حاجیوں اور ان کے اہل خانہ کی افسوسناک اموات واقع ہو گئی تھیں اور اس سال برمنگھم اور لندن میں کرونا وائرس کی وجہ سے تین افراد کی المناک اموات واقع ہوچکی ہیں اپنی پیشہ ورانہ ذمہ داریوں سے غفلت کوتاہی اوربرٹش عازمین کی صحت و تندرستی اور دوران حج انہیں حفاظتی تدابیر سے آگاہی نہ دینے سے ایکبار پھر کوئی سانحہ یا مشکل صورتحال پیدا ہو سکتی ہے جس سے کمیونٹی کا سخت رد عمل سامنے آ سکتاہے حکومت سعودی عربیہ اورولڈہیلتھ آرگنائزیشن نے بھی تمام متعلقہ ممالک کے لئے یہ ہدایات جاری کر رکھی ہیں کہ وہ اپنے عازمین کو حج کے سفر پر روانہ ہونے سے پہلے صحت و تندروستی اورحفاظتی تدابیر سے متعلق تمام ضروری اور اہم معلومات سے متعلق با خبر رکھیں ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج نے ممبر ز آف پارلیمنٹ کونسلرز کمیونٹی کی سماجی سیاسی اور مذہبی شخصیات اور تنظیموں سے کہا ہے کہ وہ برٹش عازمین حج و عمرہ کی مد د اور فلاح و بہبود کے لئے اپنا کردار ادا کریں ۔

Leave a Reply

Scroll To Top