Home / اردو / نیوز اینڈ میڈیا / ملکی قوانین کی خلاف ورزی اورحاجیوں کے استحصال کی اجازت نہیں دیں گے: لارڈ فلپ ہنٹ

ملکی قوانین کی خلاف ورزی اورحاجیوں کے استحصال کی اجازت نہیں دیں گے: لارڈ فلپ ہنٹ

حاجیوں سے ملنے والی شکایات میں اضافہ افسوسناک، قانون نافذ کرنے والے ادارے صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں، سدباب کیلئے ضروری کارروائی کی جائے گی،گورنمنٹ منسٹر

ایسوسی ایشن عازمین حج وعمرہ کیلئے کرپشن سے پاک منصفانہ سسٹم کیلئے جدوجہد کرتی رہے گی، خالد پرویز و دیگر کا حجاج کے استقبالیہ سے خطاب

برمنگھم(پ ر) حکومت ملکی قوانین کی خلاف ورزیوں اور حاجیوں کے استحصال کی اجازت نہیں دے گی اس سال حج سے واپسی پر حاجیوں سے ملنے والی شکایات میں اضافہ افسوسناک ہے، قانون نافذ کرنے والے ادارے اس ساری صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور اس کے سدباب کیلئے ضروری کارروائی کی جائے گی۔ گورنمنٹ منسٹر اور ڈپٹی لیڈر آف دی ہاؤس لارڈ فلپ ہنٹ نے یہ بات ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج کی جانب سے حاجیوں کے اعزاز میں دی جانے والی استقبالیہ دعوت میں اپنے خطاب کے دوران کہی۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومتی اعلیٰ سطح پر مختلف اداروں سے صلاح و مشورہ کرکے صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج کی جانب سے حاجیوں کی فلاح و بہبود کیلئے کی جانیوالی کاوشوں کو سراہتے ہوئے انہیں قابل تحسین قرار دیا کہ ان کی وجہ سے حکومتی حلقوں کو حاجیوں کے درپیش مسائل سمجھنے میں آسانی ہو رہی ہے۔

سعودی عرب سفارتخانہ کے سینئر سفارتکاراذاالعشرنے تقریب میں اپنے خطاب میں حاجیوں کو فریضہ حج سے واپسی پر نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے حاجیوں کو اپنی مدد اور تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب ایمبسی حج یا عمرہ کا ویزہ جاری کرنے کی کوئی فیس نہیں لیتی۔ ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج کے جنرل سیکریٹری خالد پرویز نے اس تقریب میں تشریف لائے بڑی تعداد میں مہمانوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے اس سال مقدس فریضہ حج ادا کرنے والے خوش نصیبوں کو ایسوسی ایشن کی جانب سے دلی مبارکباد پیش کی اور کہا کہ ایسوسی ایشن برطانیہ میں حجاج کرام کے عزت و احترام اور ان کے پیارومحبت کے جذبات کے کلچر کو فروغ دینے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرتی رہے گی اور عازمین حج و عمرہ کیلئے کرپشن سے پاک ایک منصفانہ سسٹم کیلئے جدوجہد کرتی رہے گی۔

مشہور عالم دین مولانا عبدالہادی العمری نے مہمانوں سے اپنے خطاب میں کہا کہ فریضہ حج ادا کرنے کے بعد اب باقی کی زندگی انتہائی محتاط طریقہ سے گزاریں۔ چونکہ سوسائٹی میں اب وہ ایک رول ماڈل کی حیثیت اختیار کرچکے ہیں اس لئے اب ان سے کوئی ایسا فعل سرزد نہ ہو کہ دوسروں کو ان پر انگلی اٹھانے کا موقع ملے۔ انہوں نے ٹورآپریٹرز کے متعلق بھی کہا کہ وہ ایک معقول معاوضہ لینے کے بعد اللہ کے مہمانوں کو ایک بہتر سروس مہیا کرنے کے پابند ہیں۔ اس لئے ضروری ہے کہ عازمین کو مشکلات و مسائل سے دوچار نہ کیا جائے۔

ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج کے ایگزیکٹو ممبر اور مشہور عالم دین مولانا سرفراز مدنی جو اس تقریب میں نظامت کے فرائض بھی انجام دے رہے تھے اپنے خطاب میں کہا کہ بعض ٹورآپریٹرز کی جانب سے اللہ کے مہمانوں کے ساتھ جو سلوک روا رکھا جارہا ہے وہ انتہائی تکلیف دہ اور افسوسناک ہے اور حج پیکیج میں بے پناہ اضافہ کرکے حاجیوں کا جو استحصال کیا جارہا ہے اس کا کوئی جواز نہیں بنتا۔ مسلم کمیونٹی ایسے ٹورآپریٹرز سے توقع رکھتی ہے کہ وہ اپنے طرز عمل میں تبدیلی لاکر اللہ کے مہمانوں کیلئے مشکلات کا سبب نہیں بنیں گے۔

ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج کے ڈاکٹر سید رضا حسین نے عازمین حج و عمرہ کی دوران عمرہ وحج صحت کو برقرار رکھنے کیلئے حفاظتی تدابیر کے بارے میں آگاہ کیا۔ اس سال فریضہ حج ادا کرنے والے لندن کے نوجوان بیرسٹر ذیشان ڈار نے اپنے خطاب میں بتایا کہ کس طرح وہ اپنے ٹورآپریٹر کے ناکافی اور ناقص انتظامات کی وجہ سے دوران حج مشکلات کا شکار رہے۔ انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ وہ ایسوسی ایشن کے ساتھ مل کر قانون شکنی کرنے والوںکے محاسبہ میں مدد دیں گے۔

ویسٹ مڈ لینڈ پولیس کے انسپکٹر مسکین علی نے عازمین کے استحصال کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ قانون شکنی روکنے کیلئے جب اور جہاں بھی ضرورت پڑی پولیس فورس ضروری اقدامات کرے گی۔ برمنگھم ٹریڈ نگ کے محکمہ کے سینئر آفیسر کرس راؤ نے عازمین پر زور دیا کہ وہ اپنی شکایات محکمہ تک پہنچائیں تاکہ ان کی مدد کی جا سکے۔ نوجوان سالسٹر عشرت محبوب نے بھی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے قانونی تجاویز پیش کیں۔ سنی کنفیڈریشن کے چیئرمین راجہ سلیم اختر نے بھی تقریب میں اپنے خطاب میں حج کے دوران اپنے ذاتی تجربات اور مشاہدات کا ذکر کرتے ہوئے موجودہ صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کیا۔ ہوم آفس کے سینئر ایڈوائزر مقصود احمد نے بھی حاجیوں سے خطاب میں انہیں مبارکباد پیش کی۔ چیئرمین جاوید عزیز نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ، مولانا امداد نعمانی نے دعا کی۔

Leave a Reply

Scroll To Top