Home / اردو / عازمین حج کو آسان، بہتر اور محفوظ بنائیں

عازمین حج کو آسان، بہتر اور محفوظ بنائیں

سانحات سے بچنے کیلئے سعودی حکومت سے مل کر انقلابی اقدامات کرنا ہوں گے

ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج کے حالیہ منعقدہ اجلاس میں حج کے انتظامات کو بہتر بنانے اور دورانِ حج ہونے والے افسوسناک حادثات اور سانحات کی روک تھام کے لئے مختلف تجاویز پر غوروخوض کیا گیا۔ اجلاس میں اس امر پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا کہ اس جدید دور میں جبکہ ان سانحات کی خبریں منٹوں، سیکنڈوں میں دنیا بھر کے ذرائع ابلاغ نشر کر رہے ہوتے ہیں تو ان خبروں سے دین کے اس اہم بنیادی رکن حج کے بارے میں ایک بہتر امیج وضح کرنے میں مدد نہیں ملتی۔ اس لئے دنیائے اسلام کو ان سانحات کی روک تھام کیلئے سعودی حکومت سے مل کر انقلابی اقدامات کرنا ہوں گے۔ بالخصوص منٰی میں شیطانوں کو کنکریاں مارتے وقت رونما ہونے والے سانحات کی سب سے بڑی وجہ 20لاکھ سے زائد حاجیوں کا زوال سے غروبِ آفتاب تک کے مختصر وقت میں شیطانوں کو کنکریاں مارنے کی کوشش کرنا ہے۔ پھر جگہ اور وقت کے تنگ ہونے کی وجہ سے جلد بازی اور بے صبری میں لوگ کچلنا شروع ہو جاتے ہیں اور یہ انتہائی افسوسناک اور تکلیف دہ صورتحال ہے کہ دنیائے اسلام کے علماء ان معصوم جانوں کے زیاں پر خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔ جبکہ رب کریم نے قرآن حکیم میں متعدد جگہ ارشاد فرمایا ہے کہ ’’وہ تمہارے حق میں آسانی چاہتا ہے۔ سختی نہیں چاہتا۔ اور نہ وہ کسی شخص کو اس کی طاقت سے زیادہ تکلیف دیتا ہے اور نہ ہی اس نے تم پر دین میں تنگی کی ہے‘‘۔

اس لئے علماء دین کو ہر حال میں غوروفکر کر کے بالخصوص شیطانوں کو کنکریاں مارنے کی مناسک کے متعلق ایسا حل تلاش کرنا ہو گا کہ جس سے وہاں پر کسی کی ہلاکت کا خدشہ نہ رہے۔ ایسوسی ایشن آف برٹش حجاج توقع رکھتی ہے کہ علماء اجتہاد سے کام لے کر کتاب و سنت اور صحابہ کرام کی سنت کو مدنظر رکھتے ہوئے کوئی ایسی صورت نکالیں گے کہ جس سے حج کی روح بھی مجروح نہ ہو اور حج کو آسان، بہتر اور محفوظ بھی بنایا جا سکے۔

Leave a Reply

Scroll To Top